Date: Thu 23 May 2024 /

23-May-2024 15-Zul Qa'dah-1445

غم ہستی نے ہمیں خون رلایا ہوگا۔ از: جانشین حضور مفتی اعظم حضرت علامہ مفتی محمد اختر رضا خاں قادری، ازہری، بریلوی رضی اللہ عنہ ( سفینۂ بخشش)

غم ہستی نے ہمیں خون رلایا ہوگا
از: جانشین حضور مفتی اعظم حضرت علامہ مفتی محمد اختر رضا خاں قادری، ازہری، بریلوی رضی اللہ عنہ ( سفینۂ بخشش)

جب کبھی ہم نے غم جاناں کو بھلایا ہوگا
غم ہستی نے ہمیں خون رلایا ہوگا

دامن دل جو سوئے یار کھنچا جاتا ہے
ہو نہ ہو اس نے مجھے آج بلایا ہوگا

آنکھ اُٹھا کر تو ذرا دیکھ مرے دل کی طرف
تیری یادوں کا چمن دل میں سجایا ہوگا

گردشِ دور ہمیں چھیڑ نہ اتنا ورنہ
اپنے نالوں سے ابھی حشر اُٹھایا ہوگا

ڈوب جائے نہ کہیں غم میں ہمارے عالم
ہم جو رو دیں گے تو بہتا ہوا دریا ہوگا

سوچئے کتنا حسیں ہوگا وہ لحظہ اخترؔ
سر بالیں پہ دم مرگ وہ آیا ہوگا

Scroll to Top

Date: Thu 23 May 2024 /

23-May-2024 15-Zul Qa'dah-1445

Contact Details

Social Links

Moon Sighting

.