Date: Sat 22 Jun 2024 /

22-Jun-2024 15-Zul Hijjah-1445

بصد ادب پے تسلیم سرجھکائے فلک۔ از: جانشین حضور مفتی اعظم حضرت علامہ مفتی محمد اختر رضا خاں قادری، ازہری، بریلوی رضی اللہ عنہ ( سفینۂ بخشش)

بصد ادب پے تسلیم سرجھکائے فلک
از: جانشین حضور مفتی اعظم حضرت علامہ مفتی محمد اختر رضا خاں قادری، ازہری، بریلوی رضی اللہ عنہ ( سفینۂ بخشش)

جھکے نہ بارِ صد احسان سے کیوں بنائے فلک
تمہارے ذرّے کے پر تو ستا رہائے فلک

یہ خاک کوچۂ جاناں ہے جس کے بوسہ کو
نہ جانے کب سے ترستے ہیں دیدہائے فلک

عفو و عظمت خاک مدینہ کیا کہئے
اسی تراب کے صدقے ہے اعتدائے فلک

یہ ان کے جلوے کی تھیں گرمیاں شب اسریٰ
نہ لائے تاب نظر بہکے دیدہائے فلک

قدم سے ان کے سر عرش بجلیاں چمکیں
کبھی تھے بند کبھی وا تھے دیدہائے فلک

میں کم نصیب بھی تیری گلی کا کتا ہوں
نگاہ لطف ادھر ہو نہ یوں ستائے فلک

یہ کس کے در سے پھرا ہے تو نجدی بے دیں
برا ہو تیرا ترے سر پہ گرہی جائے فلک

جو نام لے شہِ عرش بریں کا تو اخترؔ
بصد ادب پے تسلیم سرجھکائے فلک

Scroll to Top

Moon Sighting

.