Date: Thu 16 Jun 2022 /

16-Jun-2022 16-Zul Qa'dah-1443

سڑکوں پر اتر کر نوجوان مظاہرہ کرنے سے پرہیز کریں (مولانا سید معین میاں)

سڑکوں پر اتر کر نوجوان مظاہرہ کرنے سے پرہیز کریں (مولانا سید معین میاں)

حکومت اور پولیس سے ہمارا مطالبہ ہے کہ نپور شرما کو حراست میں لے کر سزا دے (الحاج محمد سعید نوری)

 

ممبئی 15 جون / شہر اور ملک کے حالات کو دیکھتے ہوئے ’’تحفظ ناموس رسالت بورڈ‘‘ کے زیر اہتمام، پیر طریقت رہبر شریعت حضرت علامہ مولانا الحاج سید معین الدین اشرف اشرفی جیلانی صاحب سجادہ خانقاہ عالیہ کچھوچھہ مقدسہ صدر آل انڈیا سنی جمعیۃ العلماء کی صدارت اور بانی رضا اکیڈمی قائد قوم و ملت جناب الحاج محمد سعید نوری صاحب کی سرپرستی میں علماء کرام، آئمہ عظام اور دانشواران قوم و ملت کی ایک ہنگامی میٹنگ سنی مسجد بلال میں رکھی گئی جس میں شہر کے علماء و مشائخ کے علاوہ پولیس کے اعلیٰ افسران بھی شریک ہوئے اس میٹنگ کا مدعا یہ تھا کہ شہر کا امن و امان برقرار رہے ملک کے حالات کو دیکھتے ہوئے علماء کرام اور دانشواران قوم و ملت نے یہ رائے دی کے کسی بھی حال میں سڑکوں پر اُتر کر احتجاج نہ کیا جائے ورنہ شہر کا ماحول خراب ہونے کا اندیشہ ہے گذشتہ دنوں یہی احتجاج کی وجہ سے کئی شہروں کا ماحول خراب ہوا اور جانی و مالی نقصان مسلمانوں کو اُٹھانا پڑا اور آج بھی کئی نوجوان اور کئی خاندان کے افراد سلاخوں کے پیچھے ہیں ایسے حالات میں ہمیں سوجھ بوجھ سے کام لینے کی ضرورت ہے کوئی بھی مسلمان حضور کی توہین برداشت نہیں کرسکتا ہے اور ایسے حالات میں مسلمانوں کاغم و غصہ کرنا بجا ہے لیکن وہ غم و غصہ قانون کے دائرہ میں ہوں ہمیں اپنا احتجاج قانون کے دائرے میں کرنا چاہئے اور قانونی کاراہ جوئی ہمارا حق ہے قانون کے دائرے میں رہ کر اگر کوئی کام کیا جائے تو شہر کا امن ا مان برقرار رہے گا۔ آل انڈیا سنی جمعیۃ العلماء کے صدر معین میاں نے کہا کہ سڑکوں پر اُتر کر نوجوان مظاہرہ کرنے سے پرہیز کریں غم و غصہ کرنا بجا ہے لیکن ہمیں قانون کا بھی پاس رکھنا ہے ایسا کام نہ کریں جس سے شہر کے امن و امان میں خلل پڑے کوئی بھی انصاف پسند انسان ملک کے حالات کو خراب کرنا پسند نہیں کرے گا ہماری کوشش یہ ہوگی کہ تحفظ ناموس رسالت بورڈ کے زیر اہتمام لیگل ایکشن لیا جائے اور ہر ممکن کوشش کی جائے کہ ملعونہ نپور شرما کو سخت سے سخت سزا ملے۔ اسی لئے ’’تحفظ ناموس رسالت بورڈ‘‘ کا قیام عمل میں آیا مشاہدہ بتا رہا ہے کہ جہاں پر احتجاج ہوا ہے وہاں آج مسلمان سخت پریشانی میں مبتلا ہیں کسی کے گھر پر بُلڈوزر چلایا جا رہا ہے، کسی کو حراست میں لے کر سلاخوں کے پیچھے ڈالا جا رہا ہے لہٰذا ہمیں ہر حال میں قانون کے دائرے میں رہ کر ہی کام کرنا چاہئے۔ آپ نے مزید کہا کہ نپور شرما کے خلاف پہلی ایف آئی آر رضا اکیڈمی کے ذریعہ ممبئی میں درج ہوا ہے اور اس سلسلہ میں وکلا اور پولیس کے اعلیٰ عہداران سے گفت و شنید کی جا رہی ہے کہ خاطی نپور شرما کو جلد از جلد سزا ملے آپ نے کہا کہ آئمہ کرام اپنی تقریر میں عظمت مصطفیٰ اور گستاخان رسول کی مذمت بیان کریں اور نوجوانوں کو بتائیں کہ آپ سڑک پر نہ اُترے بلکہ قانونی کارہ جوئی کریں۔ رضا اکیڈمی کے بانی الحاج محمد سعید نوری اظہار خیال کیا کہ ہندوستان کاکوئی بھی انصاف پسند انسان ماحول کو خراب کرنا پسند نہیں کرے گا ہماری کوشش ہوگی کہ ہم اپنے شہر و ملک میں امن و امان برقرار رکھیں مگر ہم خاموش نہیں بیٹھیں گے جب تک کہ ملعونہ نپور شرما کو سزا نہ دلوا دیں۔ ہم اعلیٰ عہدیداران اور حکومت کے کارندوں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ اگر وہ چاہتے ہیں کہ شہر اور ملک کا امن و امان خراب نہ ہو تو فوراً نپور شرما کو حراست میں لے کر سزا دیں اس سے مسلمانوں کا غم و غصہ کم ہوگا رضا اکیڈمی کے ماتحت ایف آئی آر درج ہواہے جب تک مجرمہ کو سزا نہیں مل جاتی ہم اپنی کوشش جاری رکھیں گے وکیلوں سے مسلسل تبادلہ خیال کیا جا رہا ہے اور قانونی پہلو پر غور کیا جا رہا ہے۔ گستاخوں کے خلاف مذمت ضرور ہو مگر سڑک پر احتجاج نہ ہو آئمہ کرام سے گذارش ہے کہ وہ نوجوانوں کو سمجھائیں اور امن و امان برقرار رکھیں۔مولانا خلیل الرحمن نوری نے کہا کہ شہر کا ماحول خراب نہ ہو اس لئے یہ میٹنگ بلائی گئی ہے نبی کی شان میں گستاخی برداشت نہیں کریں گے لیکن ہمارا احتجاج قانون کے دائرے میں ہوگا اگر توہین رسالت کا بل پاس ہو جاتا تو کوئی گستاخی کرنے کی جرأت نہیں کرتا اور ملک کے حالات ایسے نہیں ہوتے انہوں نے مزید کہا کہ نپور شرما کو فوراً گرفتار کیا جائے تاکہ مسلمانوں کا غصہ کم ہو اور ملک کے حالات مزید خراب نہ ہو۔ سائوتھ ریجن کے ایڈیشنل سی پی دلیپ ساونت نے کہا کہ ہم مسلسل قانونی پہلو پر غور کر رہے ہیں اور کوشش میں ہیں کہ مجرمہ کو سزا دلائیں آپ ہم پر بھروسہ رکھیں ہم ضرور اس پر سخت سے سخت کاروائی کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ پولیس کا کوئی مذہب نہیں ہوتا ہم ہر حال میں قانون کی پاسداری کرتے ہیں۔ سینٹرل ریجن کے ایڈیشنل سی پی گیانیشور چوان نے کہا کہ پورے ہندوستان میں سب سے پہلے ممبئی پولیس نے نپور شرما کے خلاف گناہ داخل کیا ہے اور ہماری کوشش یہ ہے کہ اس کو سخت سے سخت سزا دلائیں آپ لوگوں سے گذارش ہے کہ امن و امان کو برقرار رکھیں اور قانون کو ہاتھ میں نہ لیں۔ اس میٹنگ میں کافی علماء کرام اور دانشواران قوم نے شرکت کی بالخصوص ابراہیم طائی، روزنامہ ہندوستان کے مالک و ایڈیٹر سرفراز آرزو، چشتی ہندوستانی مسجد کے خطیب و امام مولانا عبدالجبار ماہرالقادری، مسجد قبا کے خطیب و امام مولانا امان اللہ رضا، نور باغ مسجد کے خطیب و امام مولانا نورالعین، دارالعلوم حنفیہ کے ناظم اعلیٰ حافظ و قاری عبدالقادر، حسینی اشرفی مسجد ورلی کے خطیب و امام مولانا محمد عمر صوفی صاحب، سنی مسجد بلال کے خطیب و امام قاری مشتاق احمد تیغی، دائم حکیم مسجد کے خطیب و امام حافظ و قاری الیاس، ماما حاجی علی مسجد ورلی کے خطیب و امام مولانا الطاف، دائونی مسجد کے خطیب و امام مولانا سرور صاحب اور دیگر حضرات نے شرکت کی۔

Durood Shareef Count

    Moon Sighting